پاکستانیوں کیلئے بری خبر سی پیک کو اب تک کا سب سے بڑا دھچکا

untitled-4
اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے چینی کمپنی کی جانب سے 60 ارب روپے کی لاگت سے جہلم میں لگائے جانے والے کول پاور منصوبے کا جنریشن لائسنس منسوخ کردیا۔نیپرا حکام کے مطابق اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت 60 ارب روپے کی لاگت سے جہلم سالٹ رینج میں لگنے والے کول پاور منصوبے کا جنریشن لائسنس منسوخ کردیا گیا ہے۔نیپرا نے چینی کمپنی ’چائنہ مشینری انجینئرنگ کارپوریشن (سی میک)‘ کی درخواست پر اسے جنریشن لائسنس جاری کیا تھا، کمپنی کی رضامندی سے منصوبے سے پیدا ہونے والی بجلی کا ٹیرف ساڑھے 8 روپے فی یونٹ منظور کیا تھا، جبکہ یہ کول پاور منصوبہ دسمبر 2017 میں مکمل ہونا تھا۔تاہم اب کمپنی کا نیپرا میں درخواست دائر کرتے ہوئے کہنا تھا کہ جہلم سالٹ رینج میں 330 میگاواٹ بجلی کا منصوبہ ناقابل عمل ہے۔سی میک کے مطابق نیپرا کا ٹیرف بینکوں کو قبول نہیں، کوئلہ غیر معیاری ہے، جبکہ پنڈ دادن خان میں کوئلے کی ترسیل کے لیے ریلوے کا انفرااسٹرکچر بھی موجود نہیں، لہٰذا کمپنی کا جنریشن لائسنس منسوخ کردیا جائے۔نیپرا حکام کے مطابق لائسنس منسوخ ہونے کے بعد کول پاور منصوبہ عملی طور پر ختم ہوگیا ہے۔

zubaidaapa

Comments are closed.